شریف برادران پر ایک اور کرپشن ریفرنس

  • by Admin
  • دسمبر 27, 2017
  • 0
  • 80  Views
  • 0 Shares

اسلام آباد( پریس ریلیز)چیئرمین نیب نے  سالوں سال سے زیر التوا مقدمات کو نمٹانے کا کام شروع کردیا ہے۔ نیب کے ایگزیکٹو بورڈ نے نوازشریف اور شہبازشریف کیخلاف ایک اور کرپشن ریفرنس دائر کرنے کا حکم دیا ہے ۔ یہ ریفرنس  رائیونڈ سے جاتی عمرہ  یعنی نوازشریف کے گھر تک دورویہ سڑک کی تعمیر کا ہے جس کے مطابق اس سڑک کو غیر قانونی طورپر تعمیر کیا گیا جس سے قومی کزانے کو 12کروڑ روپے کا نقصان پہنچا۔ یہ سڑک شریف برادران کی حکومت ختم ہونے کے چند ماہ بعد سن 2000میں بنائی گئی تھی۔

اس کے علاوہ نندی پور پاور پراجیکٹ میں کرپشن کی تحقیقات کا حکم دیا گیا ہے ۔ اس پروجیکٹ میں سابق   وزیرپانی و بجلی راجا پرویز اشرف، سابق سیکریٹری پانی و بجلی شاہد رفیع ، سابق سیکریڑی وزارت قانون مسعود چشتی ملزموں میں شامل ہیں۔ان ملزموں کیخلاف نندی پور پاور پراجیکٹ میں تاخیر کا الزام ہے جس سے قومی خزانے کو 113ارب روپے کا نقصان پہنچا ۔

بابر اعوان پیپلزپارٹی کے دور میں وزیرقانون تھے

راجا پرویز اشرف وزیر پانی و بجلی تھے

سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کیخلاف بھی ایک تفتیش کی منظوری دی گئی ہے۔سابق وزیر مواصلات ارباب عالمگیر اور ان کی اہلیہ عاصمہ ارباب عالمگیر پر بھی آمدن سے زائد اثاثے  بنانے کے الزامات میں تفتیش کی منظوری دی گئی ہے۔

عاصمہ ارباب عالمگیر اور ارباب عالمگیر پی پیپلزپارٹی حکومت میں ایم این ایز تھے

سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب اسلم رئیسانی کیخلاف تحقیقات کی بھی منظوری دی گئی ہے ۔ ان پر الزام ہے کہ انہوں نے 1817ملین روپے حکومت بلوچستان سے لےکر اپنے رشتہ داروں میں تقسیم کیے۔

نواب اسلم رئیسانی 2008میں بلوچستان کے وزیراعلیٰ منتخب ہوئے تھے

نیب نے متروکہ وقف بورڈ کے سربراہ آصف ہاشمی کیخلاف بھی کرپشن کی تحقیقات  کی منظوری دی گئی ہے ۔ ان پر 450پلاٹوں کی غیر قانونی الاٹمنٹ کا الزام ہے۔

آصف ہاشمی پیپلزپارٹی کے دور میں متروکہ وقف املاک کے چیئر مین تھے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

*
*